Tuesday, December 22, 2020

میں مرد ہوں کوئی مسئلہ نہیں؟ I'm male no problem..

 I'm male no problem. Why? Last night my wife stayed out all night. my wife stayed up all night with her friends, and I stayed home all night with my kids. In fact, just two weeks ago, he casually told me that his friends were adamant that he would go for a walk on the following weekend. I ignored. Then, two days later, on her way to the market, she reminded me that her friend had called and she was insisting, so I agreed. Before I say anything, I don't have much time, but she kept saying it, so what do you think?

میں مرد ہوں کوئی مسئلہ نہیں؟

کیوں؟

کل رات میری بیوی ساری رات گھر سے باہر رہی۔

جی جی میری بیوی ساری رات اپنی دوستوں کے ساتھ ، اور میں گھر میں اپنے بچوں کے ساتھ ساری رات اس کا انتظار کرتا رہا۔

دراصل دو ہفتے پہلے ہی اس نے مجھے سرسری سا بتایا کہ اسکی دوستیں بضد ہیں کہ اس سے بعد والے اختتام ہفتہ کو کہیں گھومنے چلتے ہیں۔ میں نے نظر انداز کر دیا۔ پھر دو دن بعد اس نے مارکیٹ جاتے ہوئے مجھے یاد کروایا کہ اس کی دوست کا فون آیا تھا اور وہ اصرار کر رہی تھی تو میں نے حامی بھر لی ہے۔ اس سے پہلے کہ میں کچھ کہتا بولی دل تو نہیں کرتا کہ اتنا وقت نہیں ہوتا میرے پاس مگر وہ بار بار بول رہی تھی تو کیا خیال ہے تمھارا۔

صرف اتنا کہا کہ پی کر گھر نہ آنا کہ بڑی بری مہک آتی ہے۔ بولی پینی کیا ہے بس ان کا ساتھ دوں گی۔ مجھے شوق نہیں۔ میں خاموش ہو گیا پھر کل صبح میں نے دیکھا کہ اس نے اپنے سارے کام جلدی جلدی نمٹائے اور شاید مجھے خوش کرنے کے لئے پیزہ منگوایا۔ اور خود جلدی سے تیار ہو گئی ہم دونوں نے اور بچوں نے مل کر پیزہ کھایا اور تقریبا رات کے نو بجے وہ ٹیکسی منگوا کر چلی گئی اور میں برتن باورچی خانہ میں رکھ کر دونوں بچوں کے ساتھ سونے کے لیئے کمرے میں آ گیا۔ بچوں کو فیڈر بنا کر دیے اور پھر انہیں سلا دیا۔ رات صحیح سے سو نہ پایا کہ دو دفعہ گڑیا جاگی۔ اور پھر بار بار یہ سوال کہ پتہ نہیں کیا کر رہی ہوگی اتنی تیار ہو کے کہاں گئی ہو گی۔ اور یوں ان سوچوں اور اندیشوں میں صبح کے پانچ بج گئے اب میرے انتظار کی شدت میں اضافہ ہونے لگا۔ گڑیا ایک دفعہ پھر جاگی اسے فیڈر بنا کر دیا اور ٹائم دیکھا ساڑھے پانچ ہو گئے سوچا جہاں اتنا انتظار کیا ہے تھوڑا اور کر لیتا ہوں ابھی آ جائے۔ برداشت سے باہر ہو گیا فون اٹھایا مگر کال کرنے کی ہمت نہ ہوئی اور کچھ سوچ کر میسج لکھ دیا کب آنا ہے۔ چابی لے کر گئی ہو میں سو جاؤں کیا ؟ 

چند سیکنڈز کے بعد جواب آیا کہ ٹرین سٹیشن پہ ہوں بس آدھے گھنٹے میں آتی ہوں۔ سوچا صبح صبح آئیگی تو بھوک لگی ہو گی سو پندرہ منٹ بعد اس کے لئے ناشتہ بنا دیا اور ٹیبل پہ رکھ کر انتظار کرنے لگا۔ آدھا گھنٹہ گزر گیا ناشتہ ٹھنڈا ہو گیا تب جا کر وہ گھر پہنچی۔ اندر داخل ہوتے ہی اسے کہا اتنی دیر آدھا گھنٹہ کہہ کر گھنٹہ لگا دیا ناشتہ ٹھنڈا ہو گیا۔ تو بولی میں نے تمھیں بولا تھا کہ ناشتہ بناؤ۔ اور میں چپ چاپ اسے دیکھتا رہ گیا۔

کیا کہا ؟

میں بڑا بےغیرت شوہر ہوں اور وہ جو گئی تھی ؟

اچھا وہ بھی بری ماں ، بری بیوی اور بدچلن عورت ہے۔

اچھا اچھا ٹھیک ٹھیک

پر کہانی اس کے الٹ ہے، میں گیا تھا اور وہ گھر پہ اس کیفیت سے گزری جو میں نے بیان کی۔

اب ؟

کیا کہا خیر ہے۔میں مرد ہوں کوئی مسئلہ نہیں۔.؟

1 comment:

مینیو